ملتان ( صفدرعلی بخاری سے) چئرمین مستقبل پاکستان انجینئر ندیم ممتاز قریشی نے کہا کہ بجلی اور گیس کی بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ نے عوام کو اذیت میں مبتلا کردیا ہے ،اگر حکومت نے عوام کو اس عفریت سے نکالنے کیلئے بروقت حکمت عملی نہ بنائی تو عوامی غم و غصے میں اضافہ ہوسکتا ہے ،ماضی کی حکومتوں کو بھی صرف اس وجہ سے ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے کہ انہوں نے عوام کے مسائل حل کرنے میں غفلت برتی تھی جس کی وجہ سے وہ ناکام ہوئے ،اس لئے موجودہ حکومت کو چاہیے کہ وہ بجلی و گیس کی بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ کو ختم کرنے کیلئے عملی اقدامات کرے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بجلی و گیس کی روز بروز بڑھتی ہوئی لوڈشیڈنگ کے حوالے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں جاری گیس بحران کی وجہ سے صنعتکاروں نے اپنی فیکٹریاں بند کرنے کا عندیہ دے دیا ہے جس سے غربت و بے روزگاری کے شرح میں مزید اضافہ ہونے کا خدشہ پیدا ہورہا ہے ،اس لئے ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت فیکٹریوں کوبلا تعطل گیس فراہم کرے تاکہ ملک میں انڈسٹری فروغ پاسکے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں گیس اور بجلی کی چوری کی وجہ سے لوڈشیڈنگ کا دورانیہ مسلسل بڑھ رہا ہے اور اس کا بوجھ عوام پر ڈالا جارہا ہے اگر یہ سلسلہ اسی طرح برقرار رہا توقوم کو سڑکوں پر آنے سے کوئی بھی نہیں روک پائے گا ۔انجینئر ندیم ممتاز قریشی نے کہا کہ گیس کی کم سپلائی کی بڑی وجہ ملکی ذخائر میں کمی بتائی جاتی ہے ،تاہم فرسودہ ٹرانسمیشن سسٹم بھی ہموار سپلائی کی راہ میں رکاؤٹ اور گیس کے ضیاع کا بڑا سبب ہے اس لئے موجودہ حکومت کو اس حوالے سے بھی اقدامات کرنے ہوں گے تاکہ گھریلوصارفین اور انڈسٹری کو بلا تعطل گیس کی فراہمی ممکن ہوسکے ۔