شانگلہ الپوری: یو سی ڈھیری میں ڈپٹی کمشنر شانگلہ کی کھلی کچہری میں لوگوں کا اپنے مسایل کے بارے میں اظہار خیال ضلع کونسل کے ممبر شمس الرحمن نے ڈپتی کمشنر شانگلہ اور دیگر افسران کو خوش امدید کہا ، انھوں نے الپوری ڈگری کالج میں نشستوں کی کمی اور داخلہ نہ ملنے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے بچے تعلیم سے محروم ہورہے ہیں لہذاہ اس سلسلے میں اقدامات کیے جایں الپوری تا بشام خوڑ میں مچھلیوں کا غیر قانونی
شکار ہونا اور زہر الود گولیوں کے زر یعے مچھلیوں کی نسل کشی جاری ہے جس کو روکنے کیلے اقدامات کیے جایں اس کے علاوہ سیوریج کا گندا پانی بھی دریا میں اتار دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے ابی حیات اور انسانی زندہ گی کو شدید خطرات لا حق ہے گرلز مڈل سکول ڈھری میں صرف دو استانیاں ڈیو ٹی کرتی ہے جو ناکافی ہے ناظم معتبر خان نے کہا کے بنجاڑ میں پل کا مسلہ ہے اور اس پل کے زریعے بچوں کو سکول میں انے جانے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے محکمہ فارسٹ کی جانب سے لوکل کوٹہ کے حوالے سے بھی بات کی گیی اور کہا گیا کہ یہاں محکمہ جنگلات لو کل کوٹہ نہیں دیتے جو کہ ہمارا قانونی حق ہے جن سکولوں سے اساتذہ تبدیل ہوے ہیں وہ ابھی تک خالی پڑے ہیں ڈھیری بازار میں مرغیوں کے پنجروں نے لوگوں کی زندہ گی اجران کردایا ہے لہذا اس سلسلے میں اقدامات کیے جاے ڈھیری بی۔ایچ۔او میں لیڈی ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کاسامنا ہے جبکہ بی ۔ایچ ۔او میں لیباٹری کی سہولیات بھی فراہم کیے جایں جبکہ ڈھیری کا ایک بجلی کا ٹرانسفر مر جو ایے روز خراب رہتا ہے لہذاہ یہاں پر دوسرا ٹرنسفرمرمہیا کیا جاے کیونکہ مذکورہ ٹرانسفرمر عام اکثر اپنے خرچے پر مرمت کرتا ہے اس کے علاوہ دیگر کہی مسایل زیربحث ایے کچری میں تمام محکموں کے سر برا ہ اور نمایندے موجود تھے جس نے اپنے اپنے محکموں سے متعلقہ مسایل کے جوابات دیے اخیر میں ڈپٹی کمشنر شانگلہ تاشفین حیدر نے خطاب کرتے ہوے کہا کہ ہمارہ کام عوام کو سہولیات فراہم کرنا ہے اور یہ کھلی کچریاں اس سلسلے کی ایک کڑی ہے کہ عوام کے مسایل عوام کے دہلیز پر حل ہو انھوں نے اس موقعہ پر متعلقہ محکموں کے سربراہوں اور نمایندوں کوہدایت کی کہ ان مسایل کو فوری اور تر جہی بنیادوں پر حل کیا جاے ۔