کوالا لمپور: ملائیشیا کے نو منتخب وزیراعظم مہاتیر محمد نے چین کے ساتھ اربوں ڈالر کے معاہدے منسوخ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ ملائیشیا کے 93 سالہ وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ وہ چین کے ساتھ سابق حکومت کے دور میں طے پانے والے اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کے معاہدے منسوخ کر دیں گے۔ تاہم انہوں نے تجارتی معاہدوں کی منسوخی کے طریقہ کار کے حوالے سے کچھ نہیں بتایا۔وزیراعظم مہاتیر محمد نے اپنے پہلے دورہ چین سے قبل میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ چین کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں، تاہم سابق وزیراعظم نجیب رزاق کی حکومت نے چین کے ساتھ تجارتی معاہدوں میں ملائیشیا سے زیادہ چین کے مفادات کا تحفظ کیا اس لیے اب فقط ایسے تجارتی معاہدے کیے جائیں گے، جو ملائیشیا کے مفاد میں ہوں گے اور جس سے ملائیشیا کے عوام کو فائدہ پہنچے۔واضح رہے کہ چین نے ملائیشیا کی سابق وزیراعظم نجیب رزاق کے دورِ حکومت میں انفراسٹرکچر کے شعبے میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کی تھی۔ نومنتخب وزیراعظم مہاتیر محمد کی جانب سے معاہدوں کی منسوخی کے اعلان پر چین کی جانب سے کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔