لاہور: پاکستان کی دبنگ لیڈی عائشہ ممتاز کی گرفتاری کا حکم ۔۔ عدالت نے یہ حکم کیوں جاری کیا ؟ پاکستانیوں کو چونکا دینےوالی خبر ۔کینٹ کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ ہدایت اللہ شاہ نے بطور گوا پیش نہ ہونے پر سابق ڈائریکٹر آپریشنز لاہور پنجاب فوڈ اتھارٹی عائشہ ممتاز کے خلاف دائردرخواست پرفریقین کے وکلاء کو بحث کر لئے طلب کر لیاہے۔ ۔عدالت کےروبرو،عائشہ ممتاز کے وکیل رانا طاہر محمود عدالت میں پیش ہوئے اور اپنا وکالت نامہ جمع کروا یا ،عدالت نے عائشہ ممتاز سمیت دیگر کو طلب کر رکھا تھا، پراسیکیوشن کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ سابق ڈائریکٹر آپریشنز لاہور عائشہ ممتاز نے 2016 ء کو اپنی ٹیم کیہمراہ یو کے فوڈز، تاج فوڈز پر چھاپہ مارا،معائنے کے دوران پروڈکشن یونٹ میں غیر معیاری چلی ساس تیار کی جارہی تھیں،معائنے کے دوران مالک اور اس کے ملازمین نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ٹیم کے ساتھ بدتمیزی کی جس پر تاج فوڈز پر مقدمہ درج کیا گیا ، سابق ڈائریکٹر آپریشنز لاہور عائشہ ممتاز سمیت 9 گواہان کو طلبی کے نوٹس بھی بھجوائے گئے ہیں،طلبی کے نوٹس کے باوجود کوئی بھی عدالت میں پیش نہ ہو رہا ہے،سابق ڈائریکٹر آپریشنز لاہور عائشہ ممتاز، اسسٹنٹ فوڈز سیفٹی آفسیر حسنین رسول ،نائب قاصد رضا علی سمیت 9 افراد آپریشن ٹیم کا حصہ تھے،عدالت نے گزشتہ سماعت پر سابق ڈائریکٹر آپریشنز لاہور پنجاب فوڈ اتھارٹی عائشہ ممتاز سمیت 9 گواہان کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے تھے تاہم عائشہ ممتاز کے وکلا کی جانب سے وکالت نامہ جمع کروا دیا گیاہے جس پر عدالت نے مزید سماعت ملتوی کردی۔