لاہور: تجزیہ کار ایاز امیر نے کہاہے کہ ہم نے 35سال سے مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کوبھگتا ، قوم نے امید لگائی تھی کہ تحریک انصا ف آئے گی ، اس حکومت کے بھی سودن پورے کرچکے ہیں ، اب حکومت کے مستقبل کے حوالے سے آصف زرداری ولی کا درجہ حاصل کررہے ہیں تو پھر خدا سے پناہ مانگنے کی ضرورت ہے۔  ایاز امیر نے کہا کہ گورنر ہاﺅس کی دیوار توڑنے کے بعد جب جنگلا کھڑا کیا جائے گا تو اس کو بنانے کیلئے پیسے کیا چین دیگا ؟انہوں نے کہا کہ کفایت شعاری کے گرویہ کام کررہے ہیں اور ان کا باجا بریگیڈ واہ واہ کررہاہے ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کالونیل مائنڈ سیٹ کی بات کرتے ہیں لیکن پنجاب میں سارا نظام کالونیل مائنڈ سیٹ کاہے ، پنجاب میں تو سوائے ایک سکھ راجے کے کوئی حکمران پیدا ہی نہیں ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں قیادت کا قحط الرجال ہے ، ہم 35سال سے مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کوبھگتا ، قوم نے امید لگائی تھی کہ تحریک انصا ف آئے گی اور اب اس حکومت کے بھی سودن پورے کرچکے ہیں ، حکومت کے مستقبل کے حوالے سے اب آصف زرداری ولی کا درجہ حاصل کررہے ہیں تو پھر خدا سے پناہ مانگنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملکوں میں اس سے بھی بڑے بحران ہوتے ہیں لیکن نکالنے والے لوگ بھی موجود ہیں ، ہمارے ہاں 1971سے لیکر آج تک ایک تاریک کہانی ہے ، لوگ اب کدھر جائیں