جیکب آباد(سومرو بی بی سی) مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی کی وارثان شہداءشکارپور کے ہمراہ جیکب آباد میں اہم پریس کانفرنس شکارپور کی صورتحال پر ملک بھر کی ملت جعفریہ کو تشویش ہے دھشت گردوں کی بڑھتی ہوئی سرگرمیوں کے باوجود شیعہ مراکز علماء اور وکلاء کی سیکورٹی کلوز کرنا افسوسناک ہےمطالبات تسلیم نہ ہوئے تو بھرپور احتجاجی تحریک شروع کی جائے گیعلامہ مقصود علی ڈومکی نے مزید کہا کہ سندھ حکومت نے وارثان شہداء سے جو تحریری معاہدہ کیا تھا اس پر عمل درآمد امن کی ضمانت ہے شکارپور میں ایک نا اہل شخص کو ایس ایس پی مقرر کیا گیا ہے جو شیعہ دشمن سوچ رکھتا ہے جس کے خلاف عوام اور وارثان شہداء سراپا احتجاج ہیں اگر 14 فروری تک مسائل کو حل نہ کیا گیا تو تحریک احتجاجی شروع کریں گے 22 فروری کو اس حوالے سے سندھ بھر میں احتجاج ہوگا اور اگر پھر بھی مسائل حل نہ ہوئے تو وارثان شہداء یکم مارچ کو سی ایم ہاوس کی طرف مارچ کر سکتے ہیں