مسلم لیگ  ن کے رہنما رانا ثناء اللہ نے  نواز شریف کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ لندن جا کر اپنے معالج سے دل کا علاج کرائیں اور پھر واپس آ جائیں۔رانا ثنااللہ کاکہناتھا کہ حکومتی وزیر اپنی خراب کارکردگی سے عوام اور میڈیا کی توجہ ہٹانے کے لیے ایسے بیانات دے رہے ہیں۔ روزنامہ جنگ کے مطابق رانا ثناء اللہ نے کہا کہ اگر نواز شریف کو ضمانت مل گئی، جس کے بیماری کی بنیاد پر امکانات ہیں تو کیا یہ کہا جائے گا کہ ڈیل کرکے ضمانت دی گئی؟ کیا یہ بھی کہا جائے کہ اُنہیں سزا بھی ڈیل کے تحت ہوئی تھی؟مسلم لیگ ن کے رہنما کا کہنا تھا کہ وفاقی وزراء ذمے داری کا مظاہرہ کریں۔