شانگلہ الپوری ( رضاشاہ سے ) چارکول کی ناقیص معیاراور ٹھکیدار اور مقامی ضلعی انتظامیہ کی ملی بھگت کی وجہ سے ضلعی ھیڈ کواٹر ھسپتال الپوری کے جملہ ملازمین سراپا احتجاج گزشتہ دو دن سے محکمہ صہت کی اہلکاروں کی احتجاج جاری ھسپتال میں انے والے مریضوں اور اس کے لوا حقین کو شدید مشکلا ت کا سامنا اس حوالے سے جب محکمہ صہت ضلع شانگلہ کے ذمداران سے رابطہ کیا گیا تو انھوں نے کہا کے ہمارا احتجاج اس وقت تک جاری رہیگاہ جب تک ہمارے جایز مطالبات کو حل نہیں کرایا گیا ہومیل نرسنگ کے ضلعی صدر صلاح الدین نے کہا کےاس سلسلے میں کہی دفعہ ضلعی انتظامیہ کو با خبر کیا کے چارکول کا معیار ناقیص ہے او ر متعلقہ ٹھیکدار جمیل محمد چارکول کی سیپلالی میں ناکام ہے لہذامذکورہ ٹھکیدار سے ٹھیکا واپس لیا جاے جس پر ڈپٹی کمیشنر شانگلہ نے ایک انکوالری کمیٹی تشکیل دی جہنوں نے چارکول کو چیک کرانے کے بعد اپنا رپورٹ کمیشنر کو پیش کرتے ہوے کہا کے مذکورہ چارکول ناقیص اور غیر معیاری ہے لیکن اس کے باوجو د مقامی ضلعی انتظامیہ والوں نے کوی ایکشن نہیں جس کی وجہ سے ہم محکمہ صہت والے مجبور ہوکر اج احتجاج کر رہے ہیں انھوں نے مزید وضاحت کرتے ہوے کہا کے
اس وقت چارکول کی مدمیں محکمہ صہت ضلع شانگلہ کے ضلعی ھیڈکواٹر ھسپتال الپوری کو ساٹ لاکھ روپے دیے گیے ہیں لیکن اج تک ہمیں متعلقہ تھکیدار نے کسی قسم کی سپلالی نہیں کی ہے تو یہ کرپشن نہیں تو اور کیا ہے کے دن دییاڑے سرکاری ملازمین کی جایز حق کو مارہ جارہا ہےاور ذمدارن تماشای بند بیٹے ہیں تو اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہٹھکیدار سے مقامی ضلعی انتظامیہ ملی ہوی ہے کیونکہ ہر سال شانگلہ کےسرکاری ملازمین کیلے چارکول اور فایر اوڈ کی مد میں کروڑوں کا فنڈز سرکاری خزانے سے نکلا جاتا ہے لیکن وہ ملازمین کی بجاے کرپشن کی نظر ہو جاتاہے انھوں نے وازیر اعلی خیبر پختون خواہ اور سکرٹری سے اپیل کرتے ہوے کہا ہے کہ وہ از خود اس مسلے کو حل کرانے میں دلچسپی لیں تاکہ ہمارہ یہ مسلہ جلد از جلد حل ہو سکیں ۔