رحیم یار خان (اسد جبار)مزاحمت پر فرار کے دوران پولیس موبائل شہری پر چڑھ دوڑی ہسپتال پہنچنے سے قبل دم غفار دم توڑ گیا۔ لواحقین کا نعش قومی شاہراہ پر رکھ کر احتجاج مقامی سیاسی شخصیات کی کاروائی کی یقین دہانی پر ورثاء منتشر نماز جنازہ آج ادا کی جائے گی۔تفصیل کے مطابق پولیس تھانہ رکن پور کے اہلکاروں نے گزشتہ دن موضع پوران کی بستی سلیمانی میں چادر چار دیواری کا تقدس پامال کرتے ہوئے گھروں میں داخل ہوکر وہاں پر موجود مکینوں کو تشدد کا نشانہ بنانا شروع کر دیا جس پر اہل علاقہ نے مزاحمت کرتے ہوئے سول کپڑوں میں ملبوس ایک نامعلوم اہلکار کو دبوچ لیا جبکہ پولیس پارٹی کے سربراہ و چوکی میاں امتیاز، شیخ شاہد رضا کار فیاض کورائی و دیگر پولیس موبائل میں بیٹھ کر فرار ہونے لگے تو سامنے جاتے ہوئے موٹر سائیکل سوار عبداالغفار پر پولیس موبائل چڑھا کر فرار ہو گئے شہری اپنی مدد آپ کے تحت شہری کو لیکر آر سی میانوالی قریشیاں پہنچے تاہم زخمی عبدالغفار راستے میں ہی دم توڑ چکا تھا ڈی ایس پی صدر سرکل بھی 15 پر اطلاع ملنے کے بعد موقع پر پہنچ گئے پولیس نے مشتعل مظاہرین سے مذاکرات کی کوشش کی جو ناکام رہی تاہم مقامی سیاسی شخصیت و چئیر مین گلور مسو خان سردار زاہد حسین دشتی نے ورثاء کو ذمہ دار اہلکاروں کو کیفر کردار تک پہنچانے کی یقین دہانی کرائی جس پر ورثاء نے احتاج ختم کر دیا انجہانی عبدالغفار کی نماز جنازہ آج پوران میں ادا کی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق ڈرائیور اہلکار کو معطل کرکے گرفتار کرتے ہوئے حوالات میں بند کر دیا ہے جبکہ ذمہ دار اہلکاروں کی خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی گی