اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ عمران خان حکومت کے آغاز پر ہی مایوسی کا شکار ہے تو آگے کیا ہوگا؟عمران خان کے حالیہ بیانات کے بعد لوگ انہیں ’سلیکٹڈ ‘کہنے میں حق بجانب ہیں۔نجی ٹی وی کے مطابق پیپلز پارٹی کے ترجمان سینیٹر مولابخش چانڈیو نے ویڈیو بیان میں کہاکہ وزیراعظم عمران خان کی باتیں ان کی ناکامی کا اعتراف ہے ، وزیراعظم کیا کہنا چاہ رہے کہ پارلیمنٹ ناکام ہو گئی ہے ؟عمران خان کی بات کا مطلب یہ ہے کہ پارلیمنٹ نہیں آمریت اور بادشاہت ہونی چاہئے ۔مولابخش چانڈیو نے کہاکہ عمران خان چاہتے ہیں کہ بادشاہت نافذ کر کے انہیں بادشاہ  اور ان کے نااہل وزرا کو نورتن قرار دیا جائے، افسوس کہ خود کو منتخب وزیراعظم کہنے والا پارلیمنٹ کے مستقبل سے مایوس ہو گیا ہے۔مولابخش چانڈیو نے کہا کہ حقیقی منتخب وزیراعظم کبھی بھی پارلیمنٹ سے مایوس نہیں ہو سکتا،عمران خان نے ثابت کر دیا کہ وہ ایک سلیکٹڈ وزیراعظم ہیں،عمران خان حکومت کے آغاز پر ہی مایوسی کا شکار ہیں تو آگے کیا ہوگا؟۔ مولابخش چانڈیو نے کہا کہ عمران خان کے حالیہ بیانات کے بعد لوگ انہیں سلیکٹڈ کہنے میں حق بجانب ہیں، عمران خان کے حالیہ بیانات مایوسی اور بے بسی کی بدترین مثال ہیں، میں نے کبھی ایسا بے بس وزیراعظم نہیں دیکھا۔